menu close
    press releases
    June 16, 2020

    کرونا کی وبا کے دوران دماغی صحت کو برقرار رکھنے کیلئے داؤد فاؤنڈیشن اور برٹش ایشین ٹرسٹ کے مابین اشتراک

    ملک میں کرونا وائرس سے براہ ِ راست متاثر افراد اور فرنٹ لائن پر کام کرنے والے افراد کی ذہنی صحت کو برقرار رکھنے کیلئے داؤد ہرکولیس گروپ کے سی ایس آر ونگ داؤد فاؤنڈیشن اور برٹش ایشین ٹرسٹ کے مابین ایک اسٹریٹیجک معاہدے پر دستخط ہوگئے ہیں۔یہ اشتراک اینگرو کارپوریشن کے چیئر مین حسین داؤد کے اس عزم کا اظہار ہے جس کے تحت انہوں نے چند روز پیشترکرونا وائرس کے خلاف جنگ کیلئے خدمات اور کیش کی صورت میں ایک ارب روپے کی امداد کا اعلان کیا
    تھا۔

    اس معاہدے کے تحت آؤٹ ریچ سروسز کو فرنٹ لائن ورکرز ،انڈس ہیلتھ نیٹ ورک اور دیگر ہسپتالوں کے ذریعے ٹیسٹ کئے جانے والے کرونا کے مریضوں اور عام پبلک کی ذہنی صحت کو برقرار رکھنے کیلئے تیار کیا جائے گا۔اس پروگرام کو صحت کی فراہمی اور تحقیقی ادارے آئی آر ڈی پاکستان کے اشتراک سے عمل میں لایا جائے گا۔ آئی آر ڈی ملک میں کرونا سے متاثرہ افراد کی ذہنی صحت کی دیکھ بھال کے حوالے سے کافی کام کرچکی ہے۔

    اس موقع پر داؤد ہرکولیس کے وائس چیئرمین شہزادہ داؤد نے کہا کہ اگرچہ ہماری جسمانی صحت پر کرونا کے اثرات تیزی کے ساتھ زیرِ بحث آئے ہیں لیکن مجموعی صحت اور تندرستی کے معاملے میں ذہنی صحت اور نفسیاتی پریشانی کے معاملے کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔Covid-19وبائی بیماری نے پاکستان میں ذہنی صحت کے بحران کو بڑھا دیا ہے جس کی وجہ سے امدادی خدمات کو زیادہ سے زیادہ قابلِ رسائی بنانے کی ضرورت ہے۔ برٹش ایشین ٹرسٹ کی مہارت اور تجربے سے فائدہ اٹھاتے ہوئے، ہم ذہنی صحت کی خدمات کی رسائی کو بہتر بناتے ہوئے اس اہم موضوع کی طرف معاشرتی رویوں کو تبدیل کرتے ہوئے بامقصد اثر پیدا کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

    اس موقع پر برٹش ایشن ٹرسٹ کے چیف ایگزیکٹیو رچرڈ ہاکس نے کہا کہ عالمی سطح پر یہ تسلیم کرلیا گیا ہے کہ Covid-19کی موجودگی ذہنی صحت پر نمایاں اثر ڈال رہی ہے۔خاص طور پر دنیا کے کچھ حصوں میں جہاں ذہنی صحت کو ناقابل شناخت سمجھا جا تا ہے اوران کو مالی اعانت فراہم کی جاتی ہے۔ ایسے علاقوں میں وبائی امراض کی وجہ سے پیدا ہونے والی غیر یقینی صورتِ حال، اضطراب، خوف اور تنہائی کا لوگوں کی ذہنی صحت اور تندرستی پر تباہ کن اثر پڑ رہا ہے۔ اس ذہنی صحت کے مسئلے کو حل کرنے کیلئے مشترکہ عزم کے ساتھ برٹش ایشین ٹرسٹ، داؤد فاؤنڈیشن اور آئی آر ڈی پاکستان، ذہنی صحت کی خدمات کی فراہمی کیلئے مشترکہ نقطہ نظر کو فروغ دینے کیلئے اکٹھے ہوئے ہیں۔ہمیں امید ہے کہ ہماری مشترکہ کوششوں سے اگلے چند مہینوں میں ہم 20000سے زائد افراد کو مدد فراہم کریں گے۔

    اس اشتراک پر آئی آر ڈی پاکستان کی کنٹری ڈائریکٹر انیتا پاشا نے کہا کہ ہم اس اشتراک اور برٹش ایشن ٹرسٹ اور داؤد فاؤنڈیشن کے تعاون کا حصہ بننے پر بہت پرجوش ہیں۔ہم جانتے ہیں کہ اس غیر معمولی وقت میں ذہنی صحت کی خدمات فراہم کرنااہم ضرورت ہے اور Covid-19کے دوران ذہنی صحت میں اثر پیدا کرنے کیلئے با مقصد مداخلت کی ہماری کوششوں میں ہمیں جو تعاون ملا ہے ہم اس کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔

    واضح رہے کہ ذہنی صحت کے حوالے سے اٹھایا جانے والا یہ قدم اینگرو کے چیئر مین حسین داؤداور داؤد ہرکولیس گروپ وائرس کے خلاف بیماری کی روک تھام، جانچ اور تشخیص،اس وبا کے خلاف جنگ لڑنے والے ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملے کی حفاطت، مریضوں کی دیکھ بھال اور ان کی فراہم کی جانے سہولیات کو یقینی بنانا اورمعاشرے کے مستحق افراد تک ضروریاتِ زندگی کی فراہمی کو یقینی بنانے جیسے محاذوں پرتندہی سے کام کررہے ہیں۔