menu close
    press releases
    February 09, 2021

    اینگرو فرٹیلائزرز کے PAVEپراجیکٹ نے تیسرا گلوبل ایوارڈ جیت لیا

    کراچی: اینگرو فرٹیلائزرز اور اینگرو فاؤنڈیشن کے مشترکہ PAVE پراجیکٹ کوبرطانیہ میں منعقدہ «رشلائیٹ، سسٹین ایبل ایگریکلچر، فارسٹری اینڈ بائیوڈائیورسٹی ایوارڈ»میں فاتح قرار دیا ہے۔ PAVEپراجیکٹ نے یہ تیسرا عالمی ایوارڈ حاصل کیا ہے اس سے پہلےPAVEپراجیکٹ  تائیوان میں منعقدہ ایشیا رسپانسبل انٹرپرائز ایوارڈز2019اور  آسٹریلیا کے شہر ملبورن میں 2019ایشیا پیسفک شیئرڈ ویلیو ایوارڈ ز میں بھی ایوارڈز حاصل کرچکا ہے۔

    یہPAVE پراجیکٹ اینگرو فرٹیلائزرز کے تجربے سے فائدہ اٹھا تے ہوئے  بیجوں کی ویلیو چین کو توسیع دینے کیلئے قائم کیا گیا ہے تاکہ اس کو چھوٹے زمینداروں، ابھرتے ہوئے کاروباری اداروں،بیج کے شعبے اور فوڈ سیکیوریٹی سے تعلق رکھنے والے افراد اور اداروں کیلئے یکسان مفید اور پائیدار بنایاجاسکے۔

    اس پراجیکٹ کے تحت اینگرو خواتین کسانوں سمیت چھوٹے کاشت کاروں کے ساتھ کام کرتی ہے اورسیڈ سپلائی چین کا حصہ بنانے کیلئے انہیں بیج اگانے کی تکنیکس سے متعارف کرانے کے ساتھ ساتھ انہیں تربیت فراہم کرتی ہے۔ اس اقدام نے بیج کے مختلف گروپس کے تعارف کے ذریعے فیصلہ سازی اور اور کمیونٹی کی قیادت میں خواتین کے کردار کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ ان کے معاشی استحکام کو بھی فروغ دیا ہے۔

    بطور گلوبل پارٹنر میڈا (MEDA)کنیڈااورآسٹریلیا کے خارجہ اور تجارت ڈپارٹمنٹ PAVEپراجیکٹ کے نفاذ کیلئے رہنمائی فراہم کررہے ہیں۔

    اینگرو فرٹیلائزرز کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نادر سالار قریشی کے مطابق یہ گلوبل ایوارڈPAVE پراجیکٹ اینگرو اور اس کے شراکت داروں کی لگن اور اجتماعی کاوشوں کا ثبوت ہے۔ یہ پراجیکٹ اینگرو فرٹیلائزرز کے ایک مقصد سے چلنے والے ادارے کے عزم کی عکاسی کرتا ہے۔

    ایوارڈ حاصل کرنے پر اینگرو ٹیم کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے رشلائیٹ کے آرگنائزرنے کہاکہ اس ایوارڈ میں پہلی مرتبہ شمولیت کے بعد ایوارڈ جیتنا بہت بڑی کامیابی ہے۔